ترکی نے امریکا و نیٹو کو صاف انکار کر دیا –

ترکی نے افغانستان میں ایئرپورٹ کی سیکیورٹی کیلئےمزید فوج نہ بھیجنےکا اعلان کر دیا۔

ترک وزیردفاع پلوسی آکار نے دوٹوک اعلان کیا ہے کہ کابل ایئرپورٹ کی سیکیورٹی کیلئےمزید فوج ‏نہیں بھیجیں گے۔

انہوں نے کہا کہ مشن کیلئےلاجسٹک اورمالی مدد پر امریکا سے بات جاری ہے اور جمعرات کو ‏امریکی وفد کے ساتھ معاملے پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

ترک وزیردفاع نے واضح کیا کہ ترکی6 سال تک ایئرپورٹ کی سیکیورٹی مشن کےتحت موجودگی ‏رکھے گا اور نیٹومشن کے تحت ہمارے 500 فوجی افغانستان میں موجود ہیں۔

ترکی اور نیٹو کےدرمیان روس سےدفاعی سازوسامان خریدنے پر تعلقات تناؤ کا شکار ہیں۔ نیٹو کے ‏انخلا کے بعد ترکی نے کابل ایئرپورٹ کی سیکیورٹی کی پیشکش کی تھی۔

گزشتہ ہفتے امریکی مشیرقومی سلامتی امور نے بتایا تھا کہ نیٹو سمٹ کے موقع پر ہونے والی ‏ملاقات میں اتفاق کیا تھا کہ حامدکرزئی ایئرپورٹ سے نیٹو اور امریکی فورسز کے بحفاظت انخلا ‏اور بعد میں سیکورٹی میں ترکی کلیدی کردار ادا کرے گا۔

Comments




Source link

About

Check Also

’عراق میں اب امریکا یا کسی غیر ملکی فوج کی ضرورت نہیں‘ –

بغداد: عراقی وزیراعظم مصطفیٰ الکاظمی نے اپنے ملک سے امریکی  و غیر ملکی افواج کے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے