Pakistan receives $505m from World Bank

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق ورلڈ بینک سے 50 کروڑ 55 لاکھ ڈالر موصول ہوگئے۔

اسٹیٹ بینک نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ سے جاری پیغام میں غلطی سے 505 ملین کو 505 بلین لکھ دیا، تاہم غلطی جلد ہی ٹھیک بھی کردی گئی۔

پاکستان زرمبادلہ ذخائر میں اضافے اور مالیاتی خسارے میں پر قابو پانے کیلئے عالمی مالیاتی اداروں سے قرض لیتا ہے، اس دوہری پریشانی سے بچنے کیلئے جولائی 2019ء میں پاکستان کو آئی ایم ایف سے 6 ارب ڈالر کے بیل آؤٹ پیکیج لینا پڑا تھا۔

آئی ایم ایف کے مالیاتی پیکیج نے پاکستان کو دیوالیہ ہونے سے بچایا اور ساتھ ہی ورلڈ بینک، ایشیائی ترقیاتی بینک اور ایشین انفرااسٹرکچر انویسٹمنٹ بینک سے مدد ملنے کے بھی دروازے کھولے دیئے تھے۔

عالمی مالیاتی ادارے کا کہنا ہے کہ اس پروگرام کے دوران مختلف امدادی اداروں سے 38 ارب ڈالر تک فنڈز کے مواقع پیدا کرنا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق اکنامک افیئرز ڈویژن کے اعداد و شمار میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان رواں مالی سال 13 ارب ڈالر کے غیر ملکی قرضے حاصل کرچکا ہے، حالیہ قرضوں کے باعث پاکستان اپنے زرمبادلہ ذخائر کو سال 2020ء دوگنا کرکے 12 ارب ڈالرز تک لے جانے میں کامیاب ہوا۔ پاکستان کے زرمبادلہ ذخائر اکتوبر 2019ء اور مئی 2020ء میں سرپلس میں چلے گئے تھے۔


Source link

About Raja

Check Also

انکم ٹیکس ریٹرن کی تاریخ میں 15 یوم کی توسیع ‏ –

وزیرخزانہ شوکت ترین نے انکم ٹیکس ریٹرن کی تاریخ میں 15 یوم کی توسیع کا …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *